qaumikhabrein
Image default
ٹرینڈنگسیاستقومی و عالمی خبریں

مسلم لڑکیوں کو ہندو بنانے کے منصوبے پر عمل جاری

آر ایس ایس چیف موہن بھاگوت کہتے ہیں کہ ہندستان میں آباد مسلمانوں کے اجداد ہندو ہی تھے۔ موہن بھاگوت کا یہ بیان روا روی میں دیا گیا بیان نہیں بلکہ اسکے پس پردہ ایک بڑا منصوبہ ہے۔ آر ایس ایس نے ہندستان کے مسلمانوں کو پھر سے ہندو بنانے کی منصوبہ تیار کر لیا ہے۔ اس منصوبے پر عمل در آمد کے لئے آر ایس ایس کے نشانے پر مسلم لڑکیاں ہیں۔ باقاعدہ منظم طریقے سے مسلم لڑکیوں کو ہندو بنانے کے منصوبے پر عمل کیا جارہا ہے۔ مولانا سلمان ندوی اور مولانا توقیر رضا جیسے کئی مسلم مذہبی لیڈر یہ بات تسلیم کرچکے ہیں کہ لاکھوں مسلم لڑکیاں ہندو گھروں میں جا چکی ہیں۔ آر ایس ایس نے ایک سال میں دس لاکھ مسلم لڑکیوں کو ہندو بنانے کا نشانہ مقرر کررکھا ہے۔ مسلم لڑکیوں کو اپنی محبت کے جال میں پھنسانے کے لئے ہندو جوانوں کو باقاعدہ تربیت دی جارہی ہے۔

مسلم لڑکیوں کو ٹارگٹ کرنے کے پیچھے یہ منطق ہیکہ لڑکی ہی شادی کے بعد نسل کو آگے بڑھانے کا کام کرتی ہے۔ جس طرح ایک مسلم لڑکی مسلم بچے کو جنم دیتی ہے اسی طرح مسلم لڑکی ہندو بن جانے کے بعد ہندو بچے کو جنم دےگی۔مسلم لڑکیوں کو ہندو بنانے کے منصوبے کے کچھ نکات ہندو جوانوں کے ذہن نشین کرائے جارہے ہیِں۔

1) جب بھی کسی مسلم لڑکی سے ملاقات کرو تو اسکے نام کی تعریف کرو۔ جب تمکو اسکے نام کا مطلب معلوم ہو جائے تو اسکی تعریف کرو۔ اسکو یہ باور کراؤ کہ اسکا نام بہت اچھا ہے۔ اپنے نام کی تعریف سن کر لڑکی کے دل میں تمہارے لئے نرم گوشہ پیدا ہو جائےگا۔

2)اگر تم کسی دفتر، کالج یا کسی شادی یا کسی بھی مقام پر مسلم لڑکی سے ملو تو ہاتھ ملانے کی کوشش کرو۔اگر وہ اپنی ہندو سہیلی کے ساتھ آئی ہو تو پہلے ہندو لڑکی سے ہاتھ ملاؤ۔ اس طرح وہ تم سے ہاتھ ملانے میں ججھجھک محسوس نہیں کرےگی۔

موہن بھاگوت۔سربراہ۔آر ایس ایس

3) مسلم لڑکی کے سامنے اسکے مذہب کو برا مت کہو۔ بلکہ اسلام کی تعریف کرو۔ جب تم اسلام کی تعریف کروگے تو مسلم لڑکی کے دل میں تمہارے لئے احترام کا جزبہ پیدا ہوگا۔ اسکی نظر میں تمہاری اہمیت بڑھ جائےگی۔
4)مسلم لڑکی کے مذہب کی تعریف کرنے کے کچھ روز بعد اسکو بتاؤ کہ تم اسلام قبول کرنا چاہتے ہو اور اس کام میں اسکی مدد چاہتے ہو۔ اس سے کہو کہ اسلام کی اہم باتیں تمہیں بتائے۔ اس بہانے اسکا فون نمبر حاصل کرلو۔ اس طرح وہ اپنا فون نمبر تمہیں دینے سے انکار نہیں کرےگی۔ اس بات کا خیال رکھو کہ کبھی تیسرے شخص کے ذریعے اس کا نمبر حاصل مت کرو اور نہ میسیج بھیجو۔
5) جب بھی تم مسلم لڑکی سے ملاقات کرو اسکی تعریف کا کوئی موقع ہاتھ سے مت جانے دو۔ باتوں باتوں میں اسکے لباس کی تعریف کرو۔ اسکے حجاب کی تعریف کرو۔ اسے بتاؤ کہ وہ حجاب میں بہت بہت خوبصورت لگتی ہے۔

امرینہ پپو سے شادی کرکے رادھیکا بن گئی

6) فون پر گفتگو کرتے وقت یا چیٹنگ کرتے وقت احتیاط سے کام لو۔ ایسے وقت کا انتخاب کرو کہ زیادہ سے زیادہ باتیں کرسکو۔ رات میں ساڑھے نو بجے کے بعد کا وقت بہت مناسب اور فائدے مند ہوتا ہے۔ کیونکہ عام طور سے اس وقت تک مسلمان نماز اور کھانے سے فارغ ہونے کے بعد سونے کے لئے چلے جاتے ہیں۔
7) جب بھی اس سے بات کرو اسلام کے بارے میں جاننے کی کوشش کرو۔ اس سے یہ وعدہ لو کہ وہ تمہاری اسلام کے بارے میں گفتگو کو سب سے راز میں رکھےگی۔ کیونکہ اس طرح کے واقعات ہوتے ہیں کہ وہ لڑکے کو اپنے کسی عزیز یا مولانا سے متعارف کرادیتی ہے۔ اس طرح مسلم لڑکی ہاتھ سے نکل سکتی ہے۔
8) اگر ممکن ہو تو لڑکی سے حجاب کے بارے میں سوال کرو۔ اسکے بعد تین طلاقوں اور ایک سے زیادہ شادیوں اور کئی کئی بچوں کے بارے میں سوالات کرو۔ رفتہ رفتہ اسے یہ باور کراؤ کہ وہ جینس اور ٹاپ نہیں پہن سکتی۔ وہ ایسے شوہر کے ساتھ کیسے رہ سکتی ہے جو طلاق کی تلوار اسکے سر پر لٹکائے رکھے۔ اسکو یہ خوف دلاؤ کہ اسکا شوہر دوسری اور تیسری شادی بھی کرسکتا ہے۔ اس کے ذہن میں یہ بات بٹھاؤ کہ اسلام میں عورت بچے پیدا کرنے کی مشین ہے۔ اس طرح کے سوالات اسکے ذہن کو ہندو مذہب کی جانب متوجہ کریں گے۔ لیکن اس دوران ا سکے تئیں اپنی پسندیدگی جتاتے رہو۔ باتوں باتوں میں اسے یہ بتاؤ کہ تم ایسی بیوی چاہتے ہو جو اس جیسی خوبصورت اور سمجھدار ہو۔ اسے بتاؤ کہ مسلمان بہت با تہذیب ہوتے ہو۔

اقرا شادی کے بعد سونی بن گئی

9)موقع غنیمت دیکھ کر اس سے اظہار محبت کرو۔ اسکو یہ یقین دلاؤ کہ تمہاری محبت قبول کرنے کے لئے اس پر کوئی دباؤ نہیں ہے۔ اگر تم دونوں زندگی بھر ساتھ نہیں رہ سکیں گے تو کوئی بات نہیں ہے تم یہ صدمہ برداشت کرلوگے۔ اس میں اسکی کوئی غلطی نہیں ہے۔
10) اگر لڑکی راضی نہ ہو تو اس کے اوپر دباؤ مت ڈالو لیکن اس سے اپنی محبت ظاہر کرتے رہو۔ اسکو یہ باور کراؤ کہ تم اسکے عشق میں گرفتار ہو چکے ہو۔ جلد ہی لڑکی بھی تم سے اظہار محبت کردےگی۔

11) اگر لڑکی اظہار محبت کردے تو بوس و کنار کا سلسلہ دھیرے دھیرے شروع کرو۔ اسے یہ باور کراؤ کہ تم اس سے محبت کرتے ہو اسکے جسم سے نہیں لیکن موقع ملتے ہی اس سے جسمانی رشتہ قائم کرلو۔

12) اگر مسلم لڑکی سے ہندو لڑکا جسمانی رشتہ قائم کرنے میں کامیاب ہوجاتا ہے تو سمجھو کہ مسلمان لڑکی کے ہندو بننے کا نوے فیصد کام مکمل ہو گیا۔ اگر جسمانی رشتہ قائم نہیں ہوا تو عین ممکن ہیکہ لڑکی کے گھر والے کسی نہ کسی طرح سے لڑکی کو اس سے بچانے میں کامیاب ہو جائیں ۔ جسمانی رشتہ قائم ہونے کے بعد لڑکی کو حاملہ ہونے کی زیادہ فکر ہوگی۔ اور اسکے لئے اپنی محبت اسکے گھر والوں سے زیادہ اہم ہو جائےگی۔ اسے یہ بھی خوف ہوگا کہ اگر اس نے جسمانی رشتے اور حمل کے بارے میں گھر والوں کو بتایا تو اسکے لئے اچھا نہیں ہوگا۔ اس حالت میں لڑکی کے پاس گھر والوں کو چھوڑنے کے سوا کوئی اور راستہ نہیں ہوگا۔
ہندو لڑکوں کویہ پیش کش کی جا رہیکہ اگر وہ کسی مسلم لڑکی کو جانتے ہیں اور انہیں یہ اعتماد رکھتے ہیں کہ وہ اس لڑکی کو ہندو بنانے میں کامیاب ہو جائیں گے تو انہیں پانچ لاکھ روپئے نقد اور ایک مکان دیا جائےگا۔۔ ہندو لڑکوں کو یہ بتایا جاتا ہیکہ ایک مسلم لڑکی کو ہندو بنا کر وہ ایک عظیم مذہبی کارنامہ انجام دیں گے۔

مسلم لڑکیوں کو ہندو بنانے کی سازش کا تانا بانا سامنے لانے کا مقصد یہ ہیکہ مسلم لڑکیوں کے والدین اپنی لڑکیوں کے تعلق سے ہوشیار ہو جائیں۔ انہیں نظر رکھنی ہوگی کہ انکی بیٹی کن لوگوں سے ملتی جلتی ہے۔ رات کو چھپ کر فون پر کس کس سے باتیں کرتی ہے۔ سوشل میڈیا سے کن لوگوں کے رابطے میں رہتی ہے۔ سب سے بڑی بات یہ کہ انہیں اپنی بیٹی کی مزہبی بنیاد مضبوط کرنا ہوگی تاکہ وہ کسی قسم کے بہکائے میں نہ آئے۔

سدرشن چینل کا مالک سریش منصوبے کا اقرار کررہا ہے

Related posts

رفیق زکریا کالج فار ویمنس میں بزنس ایکسپو

qaumikhabrein

ذات برادری پر سمٹی ہوئی سیاست۔۔تحریر سراج نقوی

qaumikhabrein

ڈاکٹر فاروق عبداللہ بھی کورونا مریض ہو گئے۔

qaumikhabrein

Leave a Comment