qaumikhabrein
Image default
ٹرینڈنگقومی و عالمی خبریں

نہٹور میں یوم ذ یا بیطس پر بیداری ریلی

14 نومبرکا دن دنبا بھر میں یوم ذیا بیطس کے عنوان سے منایاس جاتا ہے۔ اس موقع پر ہیلتھ اینڈ ایجوکیشن پروموشن ٹرسٹ ( ہیپٹ) نے “صحت مند نہٹور” کے تحت ایک بیداری ریلی کااہتمام کیا جس کا افتتاح پولیس انسپکٹر سریندر سنگھ (سٹی انچارج نہٹور) نے کیا۔ ریلی سے خطاب کرتے ہوئے ہیپٹ کے سکریٹری غزال مہدی نے کہا کہ انڈین کاؤنسل آف میڈیکل ریسرچ کی رپورٹ کے مطابق ہندستان میں 10 کروڑ 10 لاکھ افراد ذیا بیطس (بلڈ شوگر) میں مبتلا ہیں اور 13 کروڑ 60 لاکھ افرادذا بیطس سے عین پہلے کے مرحلہ میں ہیں۔ اس طرح ملک میں مجموعی طور 32 کروڑ 70 لاکھ افراد ذیا بیطس کا شکار ہیں۔ گزشتہ چار سالوں میں اسکے مریضوں کی تعداد میں تشویش ناک حد تک44 فیصد اضافہ ہوا ہے۔

غزال مہدی نے کہا کہ ہندستان کی 31 ریاستوں میں کئے گئے ایک سروے کے مطابق ڈائیبیٹیز کے شکار لوگوں کی سب سے زیادہ تعداد، 26.4 فیصد، گوا میں اور سب سے کم، 4.8 فیصد، اتر پردیش میں ہے لیکن 18فیصد افراد اتر پردیش میں “ قبل از ڈائیبیٹیز” کے مرحلے میں ہیں جبکہ قومی سطح پر یہ اوسط 15.3فیصد ہے۔ انہوں نے کہا کہ پہلے یہ مرض شہری اور امیر لوگوں کا مرض کہلاتا تھا لیکن اب اس کے کل مریضوں میں 66 فیصد کا تعلق دیہی علاقوں سے ہے۔

ریلی سے خطاب کرتے ہوئے ایچ ایم آئی انٹر کالج کے پرنسپل بلال زیدی، گورنمنٹ گرلز انٹر کالج کی پرنسپل ببیتا رانی، ایس این ایس ایم انٹر کالج کے سابق پرنسپل چرن سنگھ شرما نے شوگر سے متعلق آگاہی پھیلانے اور ٹیسٹ کرانے پر زور دیا۔ انہوں نے عوام سے درخواست کی کہ وہ مہدی ولا میں ہیپٹ کے ذریعہ قائم کردہ “مفت شوگر اور بلڈ پریشر جانچ اور کاؤنسلنگ سینٹر” میں زیادہ سے زیادہ تعداد میں اپنی جانچ کرائیں۔

پولیس انسپکٹر سریندر سنگھ نے شوگر اور ہائی بلڈ پریشر کے خلاف ہیپٹ کی مہم میں پولیس کے مکمل تعاون کا یقین دلایا۔
ریلی میں صحت کے والنٹیر پلے کارڈز اٹھائے ہوئے تھے جن پر شوگر کے بارے میں بیداری پیدا کرنے والے نعرے لکھے تھے۔ اس موقع پر ہیپٹ کی جانب سے عوام میں ایک پمفلٹ تقسیم کیا گیا ۔

ریلی کی ابتداء ایچ ایم آئی انٹر کالج سے ہوئی اور اس کا اختتام مہدی ولا میں واقع جانچ مرکز پر ہوا۔ ریلی اور جلسے کی نظامت جانچ سنٹر کے سینئر ہیلتھ کارکن اطاعت حسین نے کی۔
اس ریلی میں سینٹر کے ہیلتھ والنٹیر ، ایچ ایم آئی انٹر کالج، گورنمنٹ گرلز انٹر کالج کی کچھ طلبہ، اساتذہ اور معاشرے کے مختلف شعبوں سے تعلق رکھنے والے ذمہ دار افراد نے شرکت کی۔
ریلی میں شامل نمایاں افراد میں انکور جین، کامریڈ غلام صابر، ڈاکٹر متانت حسین زیدی، دلشاد حسین، محمد سلمی، محسن زیدی، نوید اقبال، نوشاد عالم، افضال قریشی، محمد کاشف، ضیاء النبی، شعیب حنیف، محمد عرفی، فرزانہ زیدی، مجاہد صدیقی،گلزار احمد،، انور صدیقی اور اقراء غفار شامل تھے۔

Related posts

مہاراشٹر ۔ اقلیتی تعلیمی اداروں میں 1474 اسامیوں پر بھرتی ہوگی۔

qaumikhabrein

مہاراشٹر میں ‘تعلیم کا حق نہیں تو ووٹ نہیں’ تحریک چلائی جائے گی

qaumikhabrein

عالم شیعت کو ایک اورنقصان۔ علامہ حسن زادہ آملی کا انتقال

qaumikhabrein

Leave a Comment