qaumikhabrein
Image default
ٹرینڈنگجموں و کشمیرقومی و عالمی خبریں

ماگام میں جشن نو روز کے حوالے سے سیمنار

‘جشن نو روز پیغام امن و محبت’ کے عنوان سے فالکوں ایجوکیشنل انسٹی ٹیوٹ، ضلع بڈگام کے ماگام میں جموں و کشمیر پیپلز جسٹس فرنٹ کی طرف سےایک سیمینار کا انعقاد کیا گیا۔اس موقع پر کوئز مقابلہ کا اہتمام بھی کیا گیا۔

اس سمینار میں مذہبی ہم آہنگی ،مختلف نسلوں،مسالک اور خاندانوں کے درمیان امن اور یکجہتی کو فروغ دینے کے لیے امن اور محبت کا پیغام دیاگیا۔ سمینار میں آغا سید شوکت مدنی کے علاؤہ کئی سرکردہ مذہبی اسکالروں نے شرکت کی۔ پیپلز جسٹس فرنٹ کے چیئرمین آغا سید عباس رضوی کے علاوہ دیگر سیاسی و سماجی کارکنان نے بھی شرکت کی۔سیمینار اور کوئز مقابلے میں مختلف سکولوں اور کالجوں کے طلباء کی خاصی تعداد نے بھی شرکت کی۔سیمینار میں علماء نے جشن نوروز کے حوالے سے تفصیلی گفتگو کی۔ آغاسید شوکت مدنی نےکہاکہ نوروز کا جشن لوگوں کے درمیان باہمی تعلقات کو مضبوط بنانے میں اہم کردار ادا کرتا ہے۔یہ ایک دوسرے کے احترام، امن اور اچھی ہمسائیگی کے نظریات کو فروغ دیتاہے۔ مذہبی اسکالرزنے کہا کہ جشن نوروز امن اور بقائے باہمی کا پیغام ہے اور اسے بڑے جوش و خروش سے منایا جانا چاہیے۔

سیاسی کارکن اعجاز مصطفیٰ ملک نے کہا کہ نوروز موسم بہار کا پہلا دن ہے اور ہر سال 21 مارچ کو منایا جاتا ہے۔ بہار کی واپسی بڑی روحانی اہمیت کی حامل ہے ۔مقررین نے کہا کہ نوروز کا جشن تنوع میں اتحاد کی بہترین مثال ہے۔ انہوں نے یہ بھی کہا کہ نوروز رکاوٹوں کو توڑتا ہے اور اعتماد کے بندھن بناتا ہے۔

پیپلز جسٹس فرنٹ کے چیئرمین آغا سید عباس رضوی نے طلباء پر زور دیا کہ تہوار برادری کے احساس اور قومی یکجہتی کو مضبوط کرنے میں ایک اہم کردار ادا کرتے ہیں اور یہ ہمیں اپنے معاشرے، اپنی اقدار، اپنی بنیاد سے جڑے رہنے اور اس کے تحفظ کی ترغیب دیتے ہیں۔ انہوں نے کہا کہ تہوارنوروز مسلمانوں، ہندوؤں، عیسائیوں اور سکھوں کے درمیان بھائی چارے کے جذبے کے ساتھ منایا جاتا ہے۔اس موقع پر ایک کوئز مقابلہ بھی منعقد کیا گیا جس میں انڈر گریجویٹ اور گریجویٹ طلباء کی بڑی تعداد نے شرکت کی۔ اور پوزیشن حاصل کرنے والوں کو اعزازات سے نوازا گیا۔ بہترین کارکردگی دکھانے والے پہلے دس طلبا کو جے کے پی جے ایف کے چیئرمین آغا سید عباس رضوی اور دیگر مہمانوں کی موجودگی میں سرٹیفکیٹ اور نقد انعامات سے نوازا گیا۔ سیمنار کے شرکا اس بات سے آگاہ ہوئے کہ شیعہ مسلک کے لوگوں کو پڑوسی ملک میں فرقہ وارانہ تشدد کے ذریعے کس طرح نشانہ بنایا جاتا ہے۔

Related posts

شیخ مجیب الرحمان کو گاندھی امن انعام

qaumikhabrein

ڈونلڈ ٹرمپ کوبڑا جھٹکا۔ نہیں لڑ سکیں گے صدارتی الیکشن

qaumikhabrein

مودی ہیں تو سب کچھ ممکن ہے۔

qaumikhabrein

Leave a Comment