qaumikhabrein
Image default
ٹرینڈنگسیاستقومی و عالمی خبریں

اسرائیل کی وجہ سے کورونا ویکسین کی 50,000 خوراکیں برباد۔

فلسطین کو ملنے والی کورونا ویکسین کی 50,000 خوراکوں کے استعمال کی مدت ختم ہو گئی۔ غزہ میں فلسطینی وزارت صحت کا کہنا ہیکہ انہیں کورونا ویکسین کی 50,000 خوراکیں اس وقت ملیں جب انکی استعمال کی مدت ختم ہو چکی تھی۔ کورونا ویکسین کی یہ خوراکیں فلسطینی اتھارٹی نے بھیجی تھیں۔ فلسطینی حکام نے ویکسن کی مدت ایکسپائر ہونے کے لئے اسرائیل کو ذمہ دار بتایا ہے۔فلسطینی وزارت صحت کے مطابق روس میں تیار اسپوتنک ویکسین کی خوراکیں کرم ابو سالم کراسنگ کے راستے غزہ پہونچی تھیں۔ لیکن جب انکی جانچ کی گئی تب معلوم ہوا کہ وہ ایکسپائر ہو چکی ہیں جسکی وجہ سے50,000 خوراکوں کی پوری کھیپ کوتلف کرنا پڑا۔

فلسطینی وزارت صحت نے اسرائیل کو اسکے لئے ذمہ دار ٹھہرایا ہے ۔ اسکا کہنا ہیکہ اسرائیل میں ویکسین کی مناسب اسٹوریج نہیں کی گئی اور انکی غزہ تک رسائی میں رکاوٹیں کھڑی کی گئیں جسکی وجہ سے اسپوتنک ویکسین کی 50,000 خوراکیں برباد ہو گئیں۔ فلسطینی وزارت صحت نے صحت عامہ کی قومی اور عالمی ایجنسیوں سے کہا ہیکہ غزہ پٹی کے مکین فلسطینیوں کے لئے کورونا ویکسین کی اضافی خوراکوں کی فراہمی کو جلد از جلد ممکن بنائیں۔

فلسطین میں کورونا مریضوں کی تعداد بڑھ رہی ہے

غزہ پٹی گزشتہ پندرہ برسوں سے اسرائیل کی سخت ناکہ بندی کا شکار ہے .واضح رہے کہ غزہ کی باریک پٹی جو مسلم آبادی پر مشتمل ہے تین اطراف سے اسرائیل کے محاصرے میں ہے اور فقط ایک باریک سی سرحد مصر کی طرف کھلتی ہے وہ بھی اسرائیل کی کڑی نگرانی میں ہے جسکی وجہ سے اشیاء خورد و نوش اور ادویات کی ترسیل کا مسئلہ ہر وقت رہتا ہے جبکہ مقاومت اسلامی کی دو مشہور تنظیمیں حماس اور جھاد اسلامی کا تعلق بھی اسی علاقے سے ہے.جسکی وجہ سے فلسطینیوں کو کھانے پینے کی اشیا اور دواؤں کی بھاری کمی کا سامنا رہتا ہے۔ غزہ میں کورونا مریضوں کی تعداد میں لگاتار اضافہ ہورہا ہے۔

Related posts

افغانستان سےامریکہ کی واپسی۔ کہاں گئے کہیں نہیں ۔کیا لائے کچھ نہیں۔

qaumikhabrein

بغیر ویزا کے ایرانی جا سکیں گے قزاخستان

qaumikhabrein

مولانا کلب جواد کے خیمے میں میرے حامی ہیں۔گستاخ قرآن وسیم کا سنسنی خیز دعویٰ۔

qaumikhabrein

Leave a Comment